عزز قارئین کرام

السلام علیکم

بعد سلام! آپ کی خدمت میں ایک ضروری گزارش یہ کرنی تھی کہ ادارے نے انفرادی ممبر شپ کا سلسلہ ایک عرصے سے ختم کردیا ہے وجہ اس کی ہے کہ ڈاک خانے کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے ممبران کو ہر ماہ پابندی سے رسالہ موصول نہیں ہوتا جس کی وجہ سے ادارے کو دو بڑے نقصانات سے دوچار ہونا پڑتا ہے۔ پہلا نقصان یہ ہوتا ہے کہ ممبران یہ سمجھتے ہیں کہ ادارہ ہماری رقم ہڑپ کرگیا اور دوسرا نقصان یہ ہوتا ہے کہ ہمارا رسالہ، لفافہ اور ڈاک ٹکٹ ضائع ہوجاتے ہیں۔

اب بعض قارئین ہم سے شکوہ کرتے ہیں کہ اس طرح ہم رسالہ پڑھنے سے محروم رہ جائیں گے لہذا ہم نے ان کی اس شکایت کو دور کرنے کے لئے یہ طریقہ کار اختیار کیا کہ ہر درد رکھنے والا مخلص سنی اپنے علاقے سے کم از کم دس ساتھیوں کو ممبر بنائے اور فی ممبر تین سو روپے سالانہ فیس کے حساب سے تین ہزار روپے مکتبہ فیضان اشرف نزد شہید مسجد کھارادر کراچی کے پتے پر منی آرڈر کردے۔ آپ کی یہ صرف ایک مرتبہ کی کاوش ہوگی پھر باآسانی آپ کو اپنے پتے پر دس ماہنامے رجسٹری ڈاک سے مل جایا کریں گے اور آپ اسے اپنے ساتھیوں تک پہنچا سکیں گے۔

یاد رکھئے! آپ کی یہ محنت رائیگاں نہیں جائے گی۔ اگر رسالہ پڑھ کر کسی مسلمان کا عقیدہ محفوظ ہوگیا تو یہ آپ کی نجات کا سبب ہوگا۔ آج اس پرفتن دور میں بدمذہبوں کا لٹریچر، ان کے باطل عقائد ہر جگہ پھیلتے جارہے ہیں کیونکہ وہ محنت کرتے ہیں مگر ہم سستی وکاہلی کا شکار ہوچکے ہیں۔ ہم سے باتیں ہوتی ہیں، محنت نہیں ہوتی۔ ہم سے غیبت ہوتی ہے، دین و مسلک کی خدمت نہیں ہوتی۔ یہی وجہ ہے کہ بدمذہبوں نے ہمارے بے شمار سنیوں کو آج بدمذہب بنادیا۔ اگر ہم اپنے رشتہ داروں، دوستوں، گلی محلے والوں اور علاقے کی طرف نظر دوڑائیں تو ہمیں نظر آئے گا کہ جو کل تک مسلک حق اہلسنت سے وابستہ تھے، وہ بدمذہبوں کے دام فریب میں آکر اب بدمذہب ہوگئے ہیں اور اسلامی عقائد کو شرک و بدعت کہتے ہیں۔ یہ سب ہماری کوتاہیوں کا نتیجہ ہے کہ ہم نے اپنے سچے عقائد ان تک نہیں پہنچائے اور نہ ہی تعلیمات رضا سے انہیں آگاہ کیا۔ نتیجہ اس کایہ نکلا کہ وہ بدمذہبوں کی صفوں میں شامل ہوگئے۔

اے میرے درد رکھنے والے بھائیو! اگر اب بھی ہم نے اپنے مسلک کا کام نہیں کیا تو پھر خدانخواستہ وہ وقت نہ آئے کہ ہماری نسلیں بدعقیدگی کے دلدل میں پھنس جائیں اور یہ سارا وبال قیامت کے روز ہم پر آئے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ آپ اگر صاحب حیثیت ہیں تو عقائد پر مبنی کتب اپنے مسلمان بھائیوں تک پہنچائیں۔ اگر صاحب حیثیت نہیں ہیں تو اپنی زبان سے مسلمانوں تک مسلک حق اہلسنت کاپیغام پہنچائیں۔ اپنا تن، من، دھن مسلک حق کے لئے قربان کردیں۔

بہت سے ایسے افراد بھی ہیں جو یہ کہتے ہیں کہ ہمیں رسالہ پڑھنے کا وقت نہیں ملتا۔ ایسے افراد ادارے کو ان لوگوں کی ممبر شپ کروادیں جو غریب و نادار ہیں جن کے پاس سالانہ ممبر شپ کی فیس نہیں ہے اپنے ایصال ثواب کے لئے، اپنے والدین اور بزرگوں کے ایصال ثواب کے لئے ان غریبوں کی ممبر شپ کروادیں تاکہ وہ اسلامی عقائد کا علم حاصل کریں اور ثواب آپ کو نصیب ہو۔

ماہنامہ تحفظ کی سالانہ فیس تین سو روپے ہے۔ تین سو روپے سالانہ فی مہینہ پچیس روپے بنتے ہیں۔ فی ماہ پچیس روپے کوئی بڑی بات نہیں ۔اگر یہ رقم دین کی خدمت میں لگ گئی تو پھر اس کی اہمیت بہت بڑھ جائے گی۔ یہ مال اﷲ تعالیٰ کی بارگاہ میں مقبول ہوجائے گا۔

معزز قارئین! اس رسالے کے ساتھ سال 2010ء اختتام پذیر ہوا۔ اب نیا سال 2011ء شروع ہونے والا ہے۔ جلدازجلد دسمبر کے مہینے میں ہی اپنی رقوم ادارے کو منی آرڈر کردیں۔ سستی نہ کریں، آگے بڑھیں اور عزم کرلیں، ہم ہر گھر میں اسلامی عقائد پہنچائیں گے۔

اﷲ تعالیٰ ہم سب کی غیب سے مدد فرمائے اور دین کی خدمت خلوص کے ساتھ کرتے ہوئے زندگی گزارنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین ثم آمین

فقط والسلام

الفقیر محمد شہزاد قادری ترابی