اسلامی سال کا ساتواں مہینہ رجب المرجب

in Tahaffuz, May 2014, مو لا نا شہز ا د قا د ری تر ا بی

اسلامی سال کا ساتواں مہینہ رجب المرجب ہے۔ یہ حرمت والا مہینہ ہے۔ اس ماہ کی بڑی فضیلت ہے۔
حدیث شریف= حضرت انس بن مالک رضی اﷲ عنہ سے روایت ہے کہ رسول پاکﷺ نے فرمایا۔ جنت میں ایک نہر ہے جسے رجب کہا جاتا ہے جو دودھ سے زیادہ سفید اور شہید سے زیادہ میٹھی ہے تو جو کوئی رجب کا ایک روزہ رکھے تو اﷲ تعالیٰ اسے اس نہر سے سیراب کرے گا (بحوالہ: شعب الایمان، جلد 3، حدیث 3800، ص 367)
٭ حضرت ابو قلابہ رضی اﷲ عنہ فرماتے ہیں کہ رجب کے روزہ داروں کے لئے جنت میں ایک محل ہے (بحوالہ: شعب الایمان، جلد 3، حدیث 3802، ص 368)
٭ رجب میں ایک رات ہے کہ اس میں نیک عمل کرنے والے کو سو برس کی نیکیوں کا ثواب ہے اور وہ رجب کی ستائیسویں شب ہے جو اس میں بارہ رکعت اس طرح پڑھے کہ ہر رکعت میں سورۂ فاتحہ اور کوئی سی ایک سورت اور ہر دو رکعت میں التحیات پڑھے اور بارہ پوری ہونے پر سلام پھیرے۔ اس کے بعد سو مرتبہ یہ پڑھے:
سُبْحٰنَ اﷲِ وَاْلحَمْدُ لِلّٰہِ وَلَا اِلٰہَ اِلاَّ اللّٰہُ واللّٰہُ اَکْبَرْ
استغفار سو مرتبہ پڑھے اور درود شریف سو مرتبہ پڑھے اور اپنی دنیاو آخرت سے جس چیز کی چاہے، دعا مانگے اور صبح کو روزہ رکھے تو اﷲ تعالیٰ اس کی سب دعائیں قبول فرمائے سوائے اس دعا کے جو گناہ کے لئے ہو
(بحوالہ: شعب الایمان، جلد 3، ص 374، حدیث 3812)
سو سال کی عبادت کا ثواب
حدیث شریف= حضرت سلمان فارسی رضی اﷲ عنہ سے مروی ہے کہ رسول پاکﷺ نے فرمایا۔ رجب میں ایک دن اور رات ہے جو اس دن روزہ رکھے اور رات کو قیام (عبادت) کرے تو گویا اس نے سو سال کے روزے رکھے اور یہ رجب کی ستائیس تاریخ ہے۔ اسی دن محمدﷺ کو اﷲ تعالیٰ نے مبعوث فرمایا ۔
(شعب الایمان، جلد 3، ص 374، حدیث3811)
٭ حدیث شریف= حضرت انس بن مالک رضی اﷲ عنہ سے روایت ہے کہ رسول پاکﷺ نے فرمایا: رجب کی ستائیسویں رات میں عبادت کرنے والوں کو سو سال کی عبادت کا ثواب ملتا ہے (احیاء العلوم، جلد اول، ص 373)
٭ امام بیہقی علیہ الرحمہ نے شعب الایمان میں لکھا ہے کہ ماہ رجب میں ایک دن روزہ رکھا اور ایک رات بہت ہی افضل اور برتر ہے جس نے اس دن روزہ رکھا اور اس رات عبادت کی تو گویا اس نے سو سال کے روزے رکھے اور سو سال تک عبادت کی۔ یہ افضل رات رجب شریف کی ستائیسویں شب ہے (ماثبت من السنہ، صفحہ نمبر 171)
یہ روایات اگرچہ ضعیف ہیں لیکن ’’فضائل اعمال‘‘ میں ضعیف روایات مقبول ہوتی ہیں (بحوالہ: مرقات اشعۃ للمعات)
لیلۃ الرغائب کی فضیلت
ماہ رجب کی پہلی جمعرات کو لیلۃ الرغائب کہتے ہیں۔ اس کی فضیلت میں جو احادیث مروی ہیں اگرچہ محدثین اپنے قاعدے کے مطابق انہیں موضوع بتلاتے ہیں مگر اجلہ اکابر اولیاء اﷲ کے نزدیک وہ صحیح ہیں۔
اس رات میں مغرب کی نماز کے بعد بارہ رکعت نفل چھ سلاموں سے ادا کی جاتی ہیں۔ ہر رکعت میں سورۂ فاتحہ کے بعد سورۂ قدر تین مرتبہ اور سورۂ اخلاص بارہ مرتبہ پڑھے۔ نماز سے فارغ ہونے کے بعد یہ درود شریف ستر مرتبہ پڑھے۔
اَللّٰہُمَّ صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدِ نِ اْلنَّبِیِّ اْلاُمِّیِّ وَعَلیٰ اٰلِہٖ وَاَصْحَاْبِہٖ وَسَلَّمْ پھر سجدہ میں جاکر ستر مرتبہ یہ پڑھے۔
سُبُّوْحٌ قُدُّوْسٌ رَبَّنَا وَرَبُّ اْلمَلَائِکَۃِ وَاْلرُّوْحُ اور سجدہ سے سر اٹھا کر ستر مرتبہ یہ پڑھے۔
رَبِّ اغْفِرْوَ ارْحَمْ وَتَجَاوَزْ عَمَّا تَعْلَمْ فَاِنَّکَ اَنْتَ الْعَلِّیُ اْلاَعْظَمُ
پھر دوسرا سجدہ کرلے اور اس میں وہی دعا پڑھے اور پھر سجدہ میں دعا مانگے جو دعا مانگے گا، قبول ہوگی (بحوالہ: ماثبت من السنہ، ص 136)
رجب کی ستائیسویں رات کے نوافل
رجب کی ستائیسویں رات کو دو رکعت نفل پڑھے اور ہر رکعت میں سورۂ فاتحہ کے بعد سورۂ اخلاص اکیس مرتبہ پڑھے۔ نماز سے فارغ ہوکر دس مرتبہ درود شریف پڑھے اور پھر کہے:
اَللّٰہُمَّ اِنّیْ اَسْئَلُکَ بِمُشَاہِدَۃِ اَسْرَاْرِ اْلمُحِبِّیْنَ وَبِاْلخَلْوَۃِ الَّتِی خَصَّصْتَ بِہَا سَیِّدَ اْلمُرْسَلِیْنَ حِیْنَ اَسْرَیْتَ بِہٖ لَیْلَۃِ اْلسَّابِعِ وَالْعِشْرِیْنَ اَنْ تَرْحَمَ قَلْبِیْ اْلحَزِیْنَ وَتُجِیْبُ دَعْوَتِیْ یَااَکْرَمَ اْلاَکْرَمِیْنَ
تو اﷲ تعالیٰ اس کی دعا قبول فرمائے گا اور جب دوسروں کے دل مردہ ہوجائیں گے تو اس کا دل زندہ رکھے گا۔ (بحوالہ: نزہۃ المجالس، جلد اول، ص 130، فضائل الایام والشہور، ص 403، مطبوعہ مکتبہ نوریہ رضویہ، فیصل آباد)
ماہ رجب المرجب میں بزرگان دین کے اعراس
1 رجب المرجّب
حضرت خواجہ قطب الدین مودود چشتی علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ نور اﷲ نعیمی قادری علیہ الرحمہ
حضرت سید امیر الدین علیہ الرحمہ

2 رجب المرجّب
حضرت مفتی تقدس علی خان علیہ الرحمہ
حضرت اقبال ممتازی رحمانی علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ غلام یٰسین جمالی علیہ الرحمہ
حضرت سید ابوالحسنات محمد احمد قادری علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ دین محمد سیالوی ثانی علیہ الرحمہ

3 رجب المرجّب
حضرت خواجہ اویس قرنی رضی اﷲ عنہ

4 رجب المرجّب
حضرت سید شاہ حسن چشتی علیہ الرحمہ
حضرت امام شافعی علیہ الرحمہ
حضرت مولانا عبدالباری فرنگی محلی علیہ الرحمہ
شہید ناموس رسالت محمد عامر چیمہ علیہ الرحمہ
حضرت قاری محمد صدیق دھونی علیہ الرحمہ

5 رجب المرجّب
حضرت امام موسیٰ کاظم رضی اﷲ عنہ
حضرت امام حسن بصری رضی اﷲ عنہ

6 رجب المرجّب
سلطان الہند حضرت خواجہ خواجگان معین الدین چشتی علیہ الرحمہ

7 رجب المرجّب
حضرت سید اشرف علی شاہ صاحب علیہ الرحمہ
حضرت عین الدین شامی علیہ الرحمہ
حضرت شیخ جلال الدین تبریزی علیہ الرحمہ

8 رجب المرجّب
حضرت امام دار قطنی علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ فیض محمد شاہ جمالی علیہ الرحمہ

9 رجب المرجّب
حضرت خواجہ شمس الدین محمد تبریزی علیہ الرحمہ
سرکارِ کلاں حضرت سید مختار اشرف اشرفی جیلانی علیہ الرحمہ

10 رجب المرجّب
حضرت مفتی شاہ محمد مسعود علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ محمد اشرف مدنی علیہ الرحمہ

11 رجب المرجّب
شیخ ابوالحسین احمد نوری (مارہرہ شریف) علیہ الرحمہ
حضرت سید علی حسین اشرفی علیہ الرحمہ

12 رجب المرجّب
حضرت شیخ ابوالحسن فراری علیہ الرحمہ
حضرت سید اجمل شاہ شہید علیہ الرحمہ

13 رجب المرجّب
حضرت خواجہ عبداﷲ محمد علیہ الرحمہ
حضرت سید موسیٰ قادری علیہ الرحمہ (بغداد شریف)
حضرت سید عبدالقادر لاہوری علیہ الرحمہ
حضرت پیر عبدالرحمن سہروردی علیہ الرحمہ

14 رجب المرجّب
ام المومنین سیدہ زینب بنت حجش رضی اﷲ عنہا
خواجہ حصام الدین جگر سوختہ علیہ الرحمہ
حضرت سید سالارِ مسعود غازی علیہ الرحمہ

15 رجب المرجّب
علامہ عبدالصمد مقتدری علیہ الرحمہ

16 رجب المرجّب
حضرت سید یعقوب زنجانی علیہ الرحمہ
محدث اعظم ہند سید محمد کچھوچھوی علیہ الرحمہ

17 رجب المرجّب
حضرت ابوالفضل عباس رضی اﷲ عنہ (عمِّ رسول)
حضرت امام حسن مثنیٰ رضی اﷲ عنہ

18 رجب المرجّب
حضرت ابو محمد عبداﷲ سرغابی تونسی علیہ الرحمہ
حضرت علامہ تحسین رضا خان علیہ الرحمہ

19 رجب المرجّب
حضرت شاہ عبدالقادر دہلوی علیہ الرحمہ
حضرت میر سید محمد اودھی علیہ الرحمہ

20 رجب المرجّب
حضرت امام محی الدین نووی علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ علائو الدین عطار علیہ الرحمہ
حضرت شاہ اویس بلگرامی علیہ الرحمہ
خواجہ حافظ محمد عبدالکریم علیہ الرحمہ
حضرت صوفی جان محمد ابوالعلائی جہانگیری علیہ الرحمہ

21 رجب المرجّب
حضرت قاضی ضیاء الدین علیہ الرحمہ
حضرت شیخ نظام الدین بلخی علیہ الرحمہ
خطیب اعظم علامہ مولانا محمد شفیع اوکاڑوی علیہ الرحمہ

22 رجب المرجّب
حضرت امام جعفر صادق رضی اﷲ عنہ
حضرت سید موسیٰ بن دائود علیہ الرحمہ
حضرت قاضی ضیاء الدین علیہ الرحمہ

23 رجب المرجّب
حضرت شیخ ذکریا ہروی علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ احمد سمنانی علیہ الرحمہ

24 رجب المرجّب
حضرت مسلم بن حجاج نیشاپوری علیہ الرحمہ
حضرت بندگی مبارک چشتی علیہ الرحمہ

25 رجب المرجّب
حضرت عمر بن عبدالعزیز علیہ الرحمہ
حضرت امام موسیٰ کاظم علیہ الرحمہ
حضرت امام مسلم علیہ الرحمہ
حضرت شاہ عبدالرحمن قلندر خراسانی علیہ الرحمہ

26 رجب المرجّب
حضرت امیر معاویہ رضی اﷲ عنہ
حضرت حسن شاہ پیرغازی علیہ الرحمہ
حضرت سید اصغر شاہ جیلانی علیہ الرحمہ

27 رجب المرجّب
حضرت جنید بغدادی رضی اﷲ عنہ
حضرت ابو صالح رضی اﷲ عنہ
حضرت بابا ولایت علی شاہ قلندری علیہ الرحمہ
امیر الحسنات پیر صاحب مانکی شریف علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ یوسف ہمدانی علیہ الرحمہ

28 رجب المرجّب
حضرت شاہ عفد الدین صابری علیہ الرحمہ

29 رجب المرجّب
حضرت امام شافعی علیہ الرحمہ
حضرت سید کبیر الدین شاہ دولہ علیہ الرحمہ
حضرت سید ضمیر الحسن چشتی علیہ الرحمہ
حضرت مفتی علامہ امیر الدین جیلانی علیہ الرحمہ
حضرت خواجہ حافظ محمد حبیب الرحمن لاثانی علیہ الرحمہ

30 رجب المرجّب
حضرت شیخ غلام نقشبند لکھنوی علیہ الرحمہ
حضرت پیر عبدالرحیم بھرچونڈی علیہ الرحمہ