دعا امام المحدثین شیخ محقق شاہ عبدالحق محدث دہلوی علیہ الرحمہ بارگاہ الٰہی میں دعاگو ہیں کہ:

in Tahaffuz, January-February 2013, ا سلا می عقا ئد, عقا ئد ا ہلسنت

’’اے اﷲ! میرا کوئی عمل ایسا نہیں ہے جسے تیرے دربار میں پیش کرنے کے لائق سمجھوں، میرے تمام اعمال میں (بطور عاجزی) فسادِ نیت موجود رہی ہے، البتہ مجھ حقیر فقیر کا ایک اعمل صرف تیری ذات پاک کی عنایت کی وجہ سے بہت شاندار ہے اور وہ یہ ہے کہ مجلس میلاد کے موقع پر میں کھڑے ہوکر سلام پڑھتا ہوں اور بہت ہی عاجزی و انکساری، محبت و خلوص کے ساتھ حبیب پاکﷺ پر درود وسلام بھیجتا ہوں۔
اے اﷲ! وہ کون سا مقام ہے جہاں میلاد مبارک سے زیادہ تیری خیروبرکت کا نزول ہوتا ہے۔ اس لئے:
اے ارحم الراحمین! مجھے پکا یقین ہے کہ میرا یہ عمل کبھی بے کار نہ جائے گا بلکہ یقینا تیری بارگاہ میں قبول ہوگا اور جو کوئی درود سلام پڑھے اور اس کے ذریعہ دعا کرے، وہ کبھی مسترد نہیں ہوسکتی‘‘