مساجد اہلسنت پر قبضے اور متفقہ لائحہ عمل

in Tahaffuz, May 2010, ا سلا می عقا ئد, عقا ئد ا ہلسنت

کچھ عرصے سے شہر کراچی میں مسلح افراد کا مساجد پر اسلحے کے زور پر قبضہ زور پکڑرہا ہے۔ گزشتہ چار ماہ میں ایسے کئی واقعات رونما ہوئے‘ تفصیلات کے مطابق ایک عرصے سے شہر کراچی میں موجود مسلک حق اہلسنت و جماعت سنی حنفی بریلوی ٹرسٹ کی کئی اہم مساجد پر دیوبندی فرقے کے لوگ سازش کے تحت قبضہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔
دیوبندی فرقے کے لوگوں نے اب پالیسی بدل دی ہے‘ پہلے وہ مساجد اہلسنت میں خدام کو بریلوی مسلک کا لبادہ پہنا کر داخل کرواتے تھے‘ آہستہ آہستہ وہ دیوبندی خادم اپنے آپکو آگے بڑھاتے ہوئے مسجد کمیٹی کا دل جیتتے ہوئے مصلیٰ امامت پر پہنچ جاتاپھر وہ مسجد کا جعلی ٹرسٹ بنوا کر مسجد اپنے دیوبندی فرقے کے لوگوں کے ہاتھوں میں دے دیتا ہے۔
اس طرح کئی مساجد دیوبندی فرقے کی سازش کا نشانہ بنیں‘ اس کی ایک لمبی فہرست ہے‘ جبکہ بعض مساجدوں میں تو اب تک ’’یامحمدﷺ‘‘ کندہ ہے مگر مسجد پر قبضہ دیوبندی فرقے کا ہے۔ ہماری معلومات کے مطابق شہر کراچی کی وہ مساجد جوکہ بریلوی مسلک کے افراد نے تعمیر کروائیں مگر اب دیوبندی فرقے کا قبضہ ہے‘ اس کی فہرست یہ ہے۔
1۔ جامع مسجد نیو ٹائون (موجودہ بنوری ٹائون مدرسے کے علاوہ مسجد کی جگہ)
2۔ دکھنی مسجد پاکستان چوک کراچی
3۔ افضل مسجد ابل چوک میٹھادر کراچی
4۔ اکبری مسجد نیو کراچی
5۔ موتی مسجد بلاک آٹھ کلفٹن کراچی
6۔ فیصل مسجد گلشن فیصل کلفٹن باتھ آئی لینڈ
7۔ گلزار حبیب مسجد فریئر ٹائون پی ایس او پمپ کے پاس کلفٹن کراچی
8۔ جامع مسجدغوثیہ ریلوے کالونی کراچی
9۔ صدیق اکبر مسجد نزد ویڈیو سینٹر مارکیٹ کلفٹن کراچی
10۔ صدیقی مسجد بلاک پانچ کلفٹن کراچی
11۔ محمد بن قاسم مسجد کھڈہ مارکیٹ نیا آباد کراچی
12۔ سفید مسجد موسیٰ لین (نالے کے پاس) کراچی
13۔ صدیقی مسجد نیا آباد کراچی
14۔ حاجیانی مسجد نیا آباد کراچی
15۔ لاکھانی میمن مسجد حسین آباد کریم آباد کراچی
16۔ حنیفہ مسجد کپڑا مارکیٹ بولٹن مارکیٹ کراچی (مسجد میں اب بھی یامحمدﷺ) کندہ ہے)
17۔ حاجیانی مسجد نیا آباد کراچی
18۔ جامع مسجد غوث اعظم (نیا نام فاروق اعظم) سلطان آباد کراچی
19۔مریم مسجد (دھوراجی کالونی) مدنی کالونی کراچی
20۔ شریفی مسجد جوڑیا بازار کراچی
21۔ بخاری مسجد (بٹاٹا مسجد) جیولری مارکیٹ کراچی
یہ ان مساجد کی فہرست آپ نے ملاحظہ فرمائی جس پر اب دیوبندی فرقے کے لوگ قابض ہیں مگر جب وقت گزرتا گیا اور عوام اہلسنت میں شعور بیدار ہوا اور اہلسنت بریلوی مسلک کے لوگ اپنی مساجد کا ٹرسٹ بنوانے لگے تو اب دیوبندی فرقے کے لوگوں نے پالیسی بدل کر اسلحہ کے زور پر مساجد اہلسنت پر قبضے کرنا شروع کردیاہے۔
جس کی تازہ مثالیں گزشتہ تین ماہ سے شدت اختیار کرچکی ہیں۔ لیاری میں واقع نبی داد مسجد چیل چوک کے امام کو اسلحہ کے زور پر دھمکایا گیا اور بالاخر کچھ دن قبل شدید زخمی کرکے مسجد سے نکلنے پر مجبور کردیا اور اسلحہ کے زور پر دیوبندی فرقے کے لوگوں نے قبضہ کرلیا۔ اس کے علاوہ جامع مسجد مجاہد لیاری کراچی پر بھی دیوبندی فرقے کے لوگ قابض ہیں اور لیاری کی ایک جامع مسجد انگارہ کے چیئرمین کو دیوبندی فرقے کے لوگ دھمکیاں دے رہے ہیں تاکہ وہ مساجد دیوبندیوں کے حوالے کردے۔
گزشتہ دنوں بنارس کراچی کی ایک جامع مسجد بنام جامع مسجد بلال پر دیوبندی فرقے کے مسلح افراد نے قبضہ کرلیا۔ ان تمام کارروائیوں پر انتظامیہ اور اعلیٰ افسران بے بسی کی تصویر بنے ہوئے ہیں۔
حکومت ان اسلحہ بردارنام نہاد مذہبی دہشت گردوں کو لگام دے جو جہاد کے نام پر فساد مچا رہے ہیں۔ نام بدل بدل کر اپنی خفیہ سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔ یہ سب حکومت اور خفیہ ایجنسیوں کے علم میں ہے مگر حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔
ضرورت اس امر کی ہے کہ سنی رہبر کونسل مسلک اہلسنت بریلوی کی تمام نمائندہ جماعتوں کو اعتماد میں لے کر جلد کوئی متفقہ لائحہ عمل کا اعلان کرے۔