لباس خضر میں رہزن یہودونصاری کی سازشیں اور ہم

in Tahaffuz, March-April 2010, متفرقا ت, منصور قادری ترابی

1۔     بے حیائی کو عام کردیا جائے
2۔     غیرت ایمانی ختم کردی جائے
3۔     لحاظ کو فوت کردیا جائے
4۔     سود کو عام کردیا جائے
5۔     عبادت سے دور کردیا جائے
6۔     رشوت کو عام کردیا جائے
7۔     شہوت لڑکوں میں لڑکیوں میں پھیل جائے
8۔     لڑکوں اور لڑکیوں میں دوستی کا رواج عام ہوجائے
9۔     بے پردگی عام ہوجائے
10۔     آپس کی محبتیں ختم ہوجائیں
11۔     والدین کی نافرمانی عام ہوجائے
12۔     بھائی بہن کی عزت کا تحفظ بھول جائے
13    ۔ والدین بے حیا ہوجائیں
14۔     مرد داڑھی رکھنا بھول جائیں
15۔     عورتیں پردے سے دور ہوجائیں
16۔     لڑکیوں میں پتلون (پینٹ) پہننے کا رواج ہوجائے
17۔     بدنگاہی عام ہوجائے
18۔     شادی بیاہ میں ناجائز رسومات عام ہوجائیں
19۔     گانے باجے عام ہوجائے
20۔     فحش گوئی عام ہوجائے
21۔     باپ بیٹے کے درمیان حیا چل بسے
22۔     گھروں میں ناچ گانا‘ ڈانڈیہ  رقص عام ہوجائے
23۔     مسلمان دینی محافل سے دور ہوجائیں
24۔     مسلمان نیکی کرنا چھوڑ دیں
25۔     لوگ حسد میں مبتلا ہوجائیں
26۔     مسلمان دولت کے جمع کرنے میں مگن ہوجائیں
27۔     مسلمان ٹی وی ڈرامے کھیل کود میںلگ جائیں
28۔     مسلمان سنیما گھروں کو آباد کرنے لگیں
29۔     مسلمان مسجدیں ویران کردیں
30۔     بزرگوں کا ادب ختم ہوجائے
31۔     مسلمان اپنی تہذیب و تمدن چھوڑ کر بے یارومددگار ہوجائیں
32۔     مسلمان اپنا مذہبی لباس چھوڑ کر یہود ونصاریٰ کے لباس کے ہوجائیں
33۔     مسلمان اپنے آپ کو بدتر اور یہود ونصاریٰ کو بہتر جانے
34۔     دین اسلام میں فتنے پیدا کردیئے جائیں۔
35۔     مسلمانوں کو آپس میں لڑایا جائے
36۔     مذہب اسلام کو دنیا میں دہشت گرد مذہب قرار دیا جائے۔
37۔     دین اسلام کو بدنام کیا جائے
38۔     مسلمانوں کا روپ دھار کر مسلمانوں کو بہکایا جائے
39۔     مسلمانوں کو حرام کی دولت امداد کے طور پر دے کر غیرت ایمانی چھین لی جائے
40۔     مسلمانوں کو عورت دے کر زنا میں مبتلا کردیا جائے
41۔     مسلمانوں میں حلال اور حرام کی تمیز ختم کردی جائے
42۔     عورتوں میں باریک لباس عام کردیا جائے
43۔    مسلمانوںمیں جھوٹ عام ہوجائے
44۔     مسلمانوں میںغیبت عام ہوجائے
45۔     مسلمان منافق ہوجائیں
46۔     مسلمانوں میں جہاد فی سبیل اﷲ کی اہمیت ختم ہوجائے
47۔     مسلمانوں کو شدت پسند قرار دیا جائے
48۔     مسلمان حرام کی دولت بہتر سمجھے
49۔     مسلمان دنیا کے سامنے ہاتھ پھیلانے والا ہوجائے
50۔     سودی قرضے عام ہوجائیں
51۔     سود کو حلال سمجھ کر عام کردیا جائے
52۔     مسلمانوں میں عشق و محبت کے ناول‘ افسانے وغیرہ عام ہوجائیںجس سے مسلمان بے غیرت ہوجائے
53۔     نشہ آور چیزیں خصوصا شراب مسلمانوں میں عام کردی جائیں۔
54۔     مسلمانوں کی نسل کشی کی جائے
55۔     فیملی پلاننگ عام ہوجائے
56۔     مسلمان بچوں اور بچیوں کو بڑے عہدوں سے دور رکھا جائے
57۔     بین الاقوامی سطح پر مسلمانوں کو سودی قرضے دیئے جائیں
58۔     مسلمان نوجوان نسل کو بے حیائی میں مبتلا کردیا جائے
59۔     مسلمانوں پر گندے گندے جادو کئے جائیں
60۔     مسلمان شیطان کو اپنا دوست بنالیں
61۔     مسلمان اپنے بزرگوں کو برا بھلا کہیں
62۔     مسلمان اپنی اسلامی تاریخ کو بھول جائیں
63۔     مسلمان اپنے مذہبی رہنمائوں کو یاد نہ کریں
64۔     مسلمان شادی بیاہ میں کھڑے ہوکر کھانا کھائیں اور کھانے کا زیاں کریں
65۔     مسلمانوں کی شادی بیاہ میں ناجائز رسومات عام کردی جائیں
66۔     لڑکوں اور لڑکیوں میں پسند کی شادی عام کردی جائے
67۔     جوان نسل میں فحش فلمیں عام کردی جائیں۔
68۔     شادی بیاہ میں مسلمان مرد و عورت کی مشترکہ محافل کی جائیں
69۔     مسلمان ناشکری کی وبا میں مبتلا ہوجائیں
70۔     مسلمانوں میں ایثار ختم اور اسراف عام ہوجائے
71۔     مسلمانوں کو ایمان سے فارغ کردیا جائے
72۔     مسلمانوں کو یاد الٰہی سے دور کردیا جائے
73۔     مسلمانوں میں سے اپنے نبی کریمﷺ کی محبت و الفت ختم کردی جائے
74۔     مسلمان صحابہ کرام رضی اﷲ عنہم کی تعظیم و توقیر نہ کریں
75۔     مسلمان اولیاء کاملین کی کرامات کے منکر ہوجائیں
76۔     مسلمان اولیاء کاملین کی محبت چھوڑ دیں
77۔     صالحین کے مزارات کو مٹادیا جائے
78۔     مسلمانوں میں جادو کو عام کردیا جائے جس کی بناء پر مسلمان اپنے دوسرے بھائی سے بدگمانی کرے
79۔     مسلمان اپنے وطن سے نفرت کریں
80۔     مسلمانوں میں حرام گوشت عام کردیا جائے
81۔     مسلمانوں کو سور کا گوشت کیمیکل کی شکل دے کر عام کردیا جائے
82۔     مسلمان مرد باپ بھائی اپنے گھر کی عورتوں کا پردہ ختم کردیں
83۔     مسلمانوں کو غدار بنادیا جائے
84۔     مسلمانوں کو تعلیم کے نام پر اپنے مذہب کے ہیرو کی تعلیم دی جائے (اسکالر شپ کے نام پر)
85۔     مسلمانوں پر مہنگائی کو مسلط کردیا جائے
86۔     مسلمان علمائے کرام کی عزت کرنا چھوڑ دیں
87۔     مسلمانوں سے ان کی مذہبی تعلیم چھین لی جائے
88۔     مسلمان نوجوان لڑکے فیشن کے نام پر پینٹ (پتلون) کو ناف سے نیچے باندھنا شروع کردیں اور یہ عام ہوجائے (اپنا ستر دکھانا حرام ہے)
89۔     نوجوان مسلمان داڑھی شریف کا مذاق اڑائیں
90۔     نوجوان نسل مسلمانوں کی فرنچ داڑھی رکھیں اور یہ عام ہوجائے (جو تقریبا عام ہوچکی ہے)
91۔     میڈیا پر دین اسلام کے خلاف پروپیگنڈہ کیا جائے۔
92۔     میڈیا پر فحش فلمیں عام کردی جائیں
93۔     میڈیا پر ہندو مت کے مناظر لمحہ لمحہ میں دکھائے جائیں (جس سے مسلمان بچے دین اسلام سے دور ہوجائیں)
94۔     مسلمانوں کے خلاف فلمیں بنائی جائیں جس سے مسلمانوں کی عزت نفس مجروح ہو۔
95۔     میڈیا پر عیسائی‘ یہودی‘ شرابی‘ زنا خور لوگوں کو مسلمان پیشوائوں کے روپ میں دکھایا جائے
96۔     میڈیا پر ان لوگوںکو لایا جائے جو بظاہر مسلمان ہوں اور بات یہود و نصاریٰ کے مطلب کی کریں
97۔     اپنے ہی یہودی اور عیسائی لوگوں کو دین اسلام کی تعلیم دے کر دین اسلام میں فتنہ پیدا کیا جائے
98۔     میڈیا پر دین اسلام کے خلاف ڈرامے بنائے جائیں
99۔     مسلمان عورتوں میں بغیر آستین کا لباس عام ہوجائے
100۔     مسلمان عورتیں ہندوئوں جیسا لباس زیب تن کریں
101۔     مسلمانوں میں برکت کے معیار کو ختم کردیا جائے
102۔     مسلمان حکمرانوں کو روپے دے کر ان کا ضمیر اور ایمان خرید لیا جائے (چاہے عورت ہی کیوں نہ دینی پڑے)
103۔     مسلمان کا روپ دھار کر مسلمان کو ذبح کیا جائے
104۔     انٹرنیٹ پر مسلمانوں کو دوسرے مسلمان سے ذبح کرتے دکھایا جائے (اور مسلمانوں کے خلاف ویڈیوز رکھی جائیں)
105۔     افغانستان و عراق میں اور مسلم ممالک میں بائبل کے غلط نسخے بانٹ کر مسلمان بچوں کو دین اسلام سے دور کردیا جائے
106۔     مسلمانوں کو کافروں کے ساتھ لڑواکر مسلم ملکوں پر قبضہ کیا جائے
107۔     کپڑوں‘ جوتوں‘ گیم آئٹم اور دیگر اشیاء پر ڈیزائننگ میں اﷲ عزوجل اور رسول اﷲﷺ اور قرآنی آیات کو لکھ کر مسلمانوں کو صغیرہ و کبیرہ گناہ میں مبتلا کیا جائے۔
باقی آئندہ شمارے میں ملاحظہ فرمائیں