آپ کے مسائل کا آسان اور شرعی حل

in Tahaffuz, October 2011, ا سلا می عقا ئد

سوال: اگر کسی کا دوران نماز وضو ٹوٹ جائے اور وہ شخص اپنی جگہ چھوڑ دے، تو اس کے دائیں بائیں یا آگے پیچھے والے کس طرح اس خالی جگہ کو پر کریں گے؟ (غلام علی، میرواہ گورچانی)

جواب: اگر کسی کا دوران نماز وضو ٹوٹ جائے تو وہ فورا نماز توڑ کر صف سے نکل جائے، جب وہ صف سے نکل گیا تو اس کے بالکل پیچھے والا نمازی حالت نماز میں ہی آگے بڑھ کر اس خالی جگہ کو پر کرے۔ پھر اس کی جگہ پر اس کے پیچھے والا یوں خالی جگہ دوران جماعت پر کی جائے گی۔

سوال: اگر امام صاحب نماز جہری یعنی فجر، مغرب اور عشاء میں بلند آواز سے قرأت کرنا بھول جائیں تو مقتدی کس طریقے سے امام کو قرأت یاد دلائیں؟

جواب: اگر امام جہری نماز میں بلند آواز سے قرأت کرنا بھول جائے تو مقتدی زور سے ’’سبحان اﷲ‘‘ کی صدا بلند کرے تاکہ امام کو قرأت یاد آجائے۔

سوال: اگر دوران نماز معمولی مقدار میں قے جوکہ بلغم، صفرا یا بدہضمی کی ہو، آجائے تو کیا حکم ہے؟

جواب: اگر دوران نماز معمولی مقدار میں قے منہ میں آجائے تو دوبارہ لوٹالے اور نماز جاری رکھے۔

سوال: موبائل فون اور میموری کارڈ کے متعلق کیا حکم ہے۔ جس میں قرآن پاک اور دیگر نعتیہ کلام محفوظ کئے ہوتے ہیں، ایسے موبائل کو پیروں میں، گود میں یا باتھ روم میں رکھنا یا استعمال کرنا کیسا ہے؟

جواب: موبائل فون اور میموری کارڈ میں قرآن مجید، نعتیہ کلام اور بیانات ریکارڈ کروانے میں کوئی حرج نہیں۔ چونکہ قرآن مجید، نعتیہ کلام اور بیانات اس کے اندر محفوظ ہیں اس لئے موبائل کو باتھ روم میں لے جانے میں کوئی حرج نہیں۔ منع اس وقت ہے جب موبائل اسکرین پر قرآنی آیات نظر آتی ہوں۔ یہی حکم پیروں میں رکھنے کا ہے کہ اگر قرآنی آیات اسکرین پر واضح نظر آتی ہوں تو پھر اس موبائل کا پیروں میں رکھنا منع ہے ورنہ کوئی حرج نہیں۔

سوال: میت کو غسل دینے والا فارغ ہوکر خود بھی غسل کرتا ہے، اس کا یہ فعل سنت، واجب یا مستحب ہے؟ میت کو غسل دینے کے بعد غسال کا غسل کرنا کیوں ضروری ہے؟

جواب: میت کو غسل دینے کے بعد خود غسل کرنا مستحب ہے کرے تو ثواب ہے نہ کرے تو کوئی گناہ نہیں ہے۔ ہاں البتہ اگر غسل کرواتے وقت میت کے بدن سے نکلی ہوئی کوئی غلاظت غسال کے کپڑوں پر لگ جائے تو غسال اس ناپاک حصے کو پانی سے پاک کرلے۔

سوال: بعض اوقات نمازی کی حالت نماز میں ٹوپی گر جاتی ہے تو برابر والا نمازی کو ٹوپی پہنا دیتا ہے، کیا ایسا کرنا درست ہے؟

جواب: اگر حالت نماز میں ٹوپی گر جائے تو نمازی خود اپنے ایک ہاتھ سے ٹوپی اٹھا کر خود پہن سکتا ہے لیکن برابر والا ٹوپی نہ پہنائے کیونکہ ا س سے نمازی کا دھیان تقسیم ہوجاتا ہے۔

سوال: اگر جماعت فوت ہوجائے تو تنہا چار فرض پڑھنے کا کیا طریقہ ہے؟

جواب: تنہا چار فرض پڑھنے کا طریقہ: نیت کرنے کے بعد تکبیر تحریمہ یعنی ’’اﷲ اکبر‘‘ کہتے ہوئے دونوں ہاتھوںکو باندھ لے پھر تعوذ، تسمیہ، سورۂ فاتحہ اور کوئی بھی سورت جو تین آیات پر مشتمل ہو پڑھے پھر رکوع، قومہ، دو سجدے کرنے کے بعد کھڑا ہوجائے پھر تسمیہ، سورۂ فاتحہ اور کوئی سورت، پھر رکوع، قومہ، دو سجدے کرکے قعدۂ اولیٰ میں بیٹھے، قعدۂ اولیٰ (پہلا قعدہ) میں التحیات مکمل کرکے کھڑا ہوجائے اور ہاتھ باندھ کر تسمیہ، سورۂ فاتحہ اور کوئی بھی سورت یا تسمیہ اور سورۂ فاتحہ یا صرف تین سبحان اﷲ کی مقدار خاموش کھڑا رہ کر رکوع میں چلا جائے پھر چوتھی رکعت میں بھی تسمیہ، سورۂ فاتحہ اور کوئی بھی سورت یا تسمیہ اور سورۂ فاتحہ یا صرف تین سبحان اﷲ کی مقدار خاموش کھڑا رہ کر رکوع میں چلا جائے پھر قومہ، دو سجدے اور قعدۂ آخرہ میں بیٹھ کر التحیات، درود ابراہیم اور دعا پڑھے اور دعا پڑھنے کے بعد سلام پھیر کر نماز سے خارج ہوجائے۔